بھارتی معاشرے میں جناسی جروم کا جن ایسا بے قابو ہوا ہے کہ اب چھوٹی عمر کے بچے بھی جن سی مجر م بننے لگے ہیں۔ نوئڈا شہر میں پیش آنے والا لرزہ خیز واقعہ ایک ایسی ہی عبرتناک مثال ہے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق پیر کے روز سیکٹر 73 کے علاقے میں ساتویں جماعت کے لڑکے نے اپنے ہمسائے کی چار سالہ بیٹی کو جن سی زیادت ی کا نشانہ بنا ڈالا۔

واقعے کے وقت لڑکے کے والدین محنت مزدوری کے لیے گھر سے باہر تھے جبکہ کمسن بچی بھی گھر میں اکیلی تھی۔ اس کے والدین اسے بڑی بہن کے ساتھ چھوڑ کر کام پر گئے ہوئے تھے۔ جب کچھ وقت کے لئے بڑی بہن گھر سے باہر گئی تو لڑکے نے کمسن بچی کو اکیلا پا کر ٹافی کا لالچ دے کر اپنے گھر بلا لیا اور اسے جن سی کا نشا نہ بنا ڈالا۔ جب بچی اپنے گھر واپس گئی تو در د کے باعث رو رہی تھی۔ اس کی والدہ گھر واپس آئی تو اس نے سارا ماجرا اس کے سامنے بیان کر دیا۔ والدہ کی شکایت پر پولیس نے لڑکے کو حر است میں لے کر پوچھ گچھ کی تو اس نے سچ اگل دیا۔ ملزم کو بچوں کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں سے اسے ریمانڈ ہوم بھیج دیا گیا ہے۔ طبی معائنے میں بھی بچیسے زیاداتی ثابت ہو چکی ہے اور ملزم لڑکے خلاف بھارتی قانون کی دفعہ 377 کے تحت مقدمہ درج کر کے کاروائی کی جا رہی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں