ہم بچپن سے اپنے بڑوں سے یہ سنتے آرہے ہیں کہ اگر چپل الٹی ہو تواسے فوراً سیدھا کر دیں کیونکہ الٹی چپل سے آسمان پر لعنت جاتی ہے۔

یہاں تک کہ اگر ہم خود بھی کسی چپل کو الٹا پرا دیکھیں تو دیکھنے میں ہی غلط اور گناہ کا احساس ہونے لگتا اور چپل سیدھی کر کے ہی دم لیتے ہیں اور دوسروں کو بھی یہی پیغام دیتے ہیں۔

الٹی چپل یا چیز وغیرہ کو سیدھا کردینا اچھی بات ہے لیکن اس کے الٹا رہنے سے یہ سمجھنا کہ اس سے اوپر لعنت جاتی ہے اس کی کوئی حقیقت واضح نہیں۔

لیکن یہ بات حقیقت ہے کہ آسمان کی طرف نیک اعمال اور دعائیں چڑھتی ہیں۔

ایک آیت کا ترجمہ ہے کہ اسی کی طرف پاک کلمات اوپر جاتے ہیں جنہیں نیک اعمال اوپر اٹھاتے ہیں ۔ (سورۃ فاطر ۱۰)

اور آسمان کی طرف سے وحی اور رزق نازل ہوتا ہے ،جو قرآن مجید میں جابجا مذکور ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں