پر ایسا کام ہو جاتا ہے کہ جس کے ساتھ یہ کام ہوتا ہے وہ جان کر آف بگولہ ہو جاتا ہے۔ برطانیہ میں ایک ڈلیوری بوائے 13 سالہ لڑکی کو ایسی چیز پکڑا کر چلا گیا جس پر لڑکی کی ماں کے غصے کی انتہا نہ رہی۔

اور اس نے سپر مارکیٹ میں شکایت کردی۔ جس پر انتظامیہ کو اس غلطی پر معافی مانگنی پڑ گئی۔ ڈیلی سٹار کے مطابق میڈیسن ڈاکٹر نامی خاتون کو ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جب کہ اس کی 13 سالہ بیٹی گھر پر اپنے والد کا انتظار کر رہی تھی۔ اسی دوران فیملی کی جانب سے سپر مارکیٹ میں آرڈر کیا جانے والا سامان آگیا جس میں سگریٹ کے دو ڈبے بھی شامل تھے۔ ڈلیوری بوائے نے یہ سگریٹ بھی 13 سالہ لڑکی کو دے دیے اور اپنا کام کرکے چلتا بنا۔ جب ہسپتال میں موجود میڈیسن ڈاکٹر کو اس بارے میں پتا چلا تو اس نے ہنگامہ برپا کردیا اور سپر مارکیٹ میں شکایت کی۔ پہلے تو نو عمر لڑکی کو سگریٹ کی ڈلیوری دینے کے معاملے پر سپر مارکیٹ نے کان نہ دھرے تاہم خاتون کے میڈیا میں آنے پر سپر مارکیٹ انتظامیہ نے معافی مانگ لی۔ دوسری جانب امریکی شہری نے چترال کے علاقے گرم چشمہ توشی کے مقام پر کشمیر مارخور کا ٹرافی شکار کیا ہے جس کے لیے امریکی شہری برائن کنسل نے تقریباً ایک لاکھ 60ہزار امریکی ڈالرز (پاکستانی تقریباً دو کروڑ 50لاکھ روپے) میں پرمٹ حاصل کیا تھا۔ یہ مبینہ طورپر اب تک کی سب سے زیادہ رقم تھی ۔ وائلڈ لائف حکام کے مطابق کشمیری مارخور کی عمر 9 سال اور سینگوں کی لمبائی 47 انچ تھی ۔اس سے قبل بھی ایک امریکی اور ایک روسی شہری مارخور کا شکار کر چکے ہیں جنہوں نے مارخورکے شکار کے لیے تقریباً دو کروڑ روپے کا پرمٹ حاصل کیا تھا۔

Sharing is caring!

اپنا تبصرہ بھیجیں