آ

خوبصورت قابو میں ذرا مشکل سے آتی ہے لیکن ایک بات اس کی کمزوری ہوتی ہے اور وہ ہے جمہوریت تعریف کرتا ہے تو وہ بے چین ہوجاتی ھے لیکن مرد خوبصورت عورت کی وجہ سے اپنے مقصد کو بھول جاتے اور یہ کام کرنے سے یقیناً وہ سب کچھ کھو دیتے ہیں ایک بہت ہی خوبصورت مسلمان خاتون تھیں اپنے بیٹے کو پاس کے مدرسے میں اردو سیکھنے کے لیے داخل کروائے اردو پڑھانے والے استاد عورت کی خوبصورتی کے بارے میں جانتا تھا کے وقت استاد صاحب نے اس کے بیٹے سے کہا اپنی امی کو میرا سلام کہنا بیٹے نے آکر

ماں تو کہہ دیا کہ استاد صاحب نے آپ کو سلام بھیجا ہے خاتون نے بھی بیٹے کے ہاتھوں سلام کا جواب سلام بھیج کر دے دیا خاتون نے شوہر سے مشورہ کیا اور اگلے دن بیٹے سے استاد کو کہلوایا کہ میں نے شام کو گھر پر بلایا نہیں تھا تری کروایا خوشبو لگائیں اور پہنچ گیا اس عورت نے گھر چائے ناشتہ کروایا پھر بیٹے کی تعلیم کے بارے میں معلومات ہے استاد رسمی باتیں کرنے کے بعد اپنی اصلیت پہ آیا تھا ماشاءاللہ آپ کو خدا نے بڑی فرصت میں تراشا ہے ہاں تو روتا ہے شکریہ آپ کا استاد بولے مجھے آپ سے عشق ہو گیا

خاتون بولی جی ہاں وہ تو ہے پر یہ بات اگر میرے شوہر نے سن لے تو بہت مشکل ہو جائے گا وہ آتے ہی ہوں گے وہ بجائے کل شام کو بات کریں گے میں انتظار کرو گے استاد چلنے کو ہوا ہی تھا کہ باہر سے اس خاتون کے شوہر کی آواز ہے کون ہے استاد گھبرایا میں چھپ جاؤ خاتون نے ساڑھی پہننا ڈھونڈ کر دیا اور گندم پیسنے والی پتھر کی چکی کے پاس بٹھا دیا اور کہا آپ آہستہ کا گندم پیسے میں انہیں چائے وغیرہ پلا کر باہر بھیجتی ہوں آپ موقع دیکھ کر بھاگ جائے گا ہے اور گندم پیسنے شہد اور پوچھا یہ کون ہو رہا ہے

خاتون بولی پڑوس میں نئے کرایہ دار ہے ان کی بیوی ہے گندم پیسنے آئی ہے شوہر اور بیوی بہت دیر تک ہنسی مذاق اور باتیں کرتے رہے ایک گھنٹے بعد شوہر نے کہا میں حضرت ہونے کی دکان سے پان کھا کر آتا ہوں اور ان میں وہاں سے بھاگ پندرہ دن بعد عورت کے بیٹے نے مدرسے میں استاد سے کہا ماں نے آپ کو سلام بھیجا ہے ہے اور کام خوروں آٹا ختم ہو گیا ہوگا یا 20 کلو آٹا کھا لے کر دوبارہ سلام بھیج

اپنا تبصرہ بھیجیں