جنوبی امریکہ سے تعلق رکھنے والے کونراڈو ایسٹراڈا کی ناک میں رسولی کے باعث ناک کا حجم عام آدمی کے لحاظ سے کئی گنا بڑھ چکا تھا۔تاہم کرسمس کے اس خوشی کے موقعے پر نیویارک سے تعلق رکھنے والے پلاسٹک سرجن ڈاکٹر تھامس رومو نے 57 سالہ شخص کی مشکل کو آسان کردیا۔

امریکی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر رومو نے بتایا کہ میں نے کونراڈو کو ایک ڈاکٹر کے گھر پر دیکھا تھا، اور جب میں نے اسے دیکھا تو میں سمجھ گیا تھا کہ اس شخص کو ناک میں رسولی کی شکایت ہے۔مزید کہا کہ میں نے کونراڈو کو دیکھتے ہی فیصلہ کیا تھا کہ میں اس شخص

 

کا علاج مفت کروں گا اور میں نے یہ بات اپنے اسٹاف کو بھی کہہ دی تھی۔مریض کونراڈو نے بتایا کہ ناک میں رسولی کے باعث مجھے کھانے پینے اور سانس لینے میں تکلیف محسوس ہوتی تھی۔بعدازاں آپریشن کے بعد کونراڈو کی ناک کو مکمل طور پر پہلے جیسا کردیا گیا ہے۔

 

اپنا تبصرہ بھیجیں