عورت درست شخص کے ہاتھ میں سب سے خوبصورت کتاب ہے

نفرت اتنی خالص چیز ہے ہو جاۓ تو ثابت کرنے کے لیے قسمیں کھانے کی ضرورت ہی نہیں پڑتی

مجھے پانے کی ضد نہ کرو میں خود کسی کی چوڑی ہوئی محبت ہوں

پر ہیز کیجئے پھر کی کاستخارہ درست نہیں آتا تو کسی کے اماں ابا و نہیں مانتے

ان عورتوں یہ بھی رحم کھایا جاۓ جو جھوٹے مرکار مردوں کے چکروں میں ہنس جاتی ہیں

ترس آتا ہے ان مردوں پر جو تیز طرار اور جھوئی عورتوں سے محبت کر بیٹھتے ہیں ا

میرا مسئلہ اک یہ بھی ہے کہ اگر میں کسی کو راک یہ ہے می اگنور کر نا شروع کر دوں تو پھر اگلے کو اپنے ہونے پر بھی شک ہونے لگتا ہے ، اور پھر اپنے ہاتھ ، نبض کاٹ کر اپنی سانس لینے کا یقین کرتا ہے اگر میں تمہیں اگنور کرنے کے باوجود تمہارے زندہ ہونے کا یقین دلا رہی ہوں تو قدر کرو میری کہ یہ میری مزاج کے خلاف ہے

ہر شے کی ایک حد ہوتی ہے جب وہ حد پار کرلی ۔ جاۓ تو پھر اس شخص کو رعایت نہیں دی ض اصول ایسے ہوتے ہیں جن پر حاسکتی ۔ سمجھوتا ناممکن ہو تا ہے سو اپنی زندگی میں ایسے اصول بنائیں کہ اگر کوئی انہیں توڑے تو آپ اس ابیس کو کوئی رعایت نہ دیں عزازیل ہر کوئی بن سکتا ہے مگر جو عزازیل سے ابلیس بنے ، وہ بندگی کی جنت سے ہمیشہ کے لئے نکال دیا جاتا ہے اسکی کبھی واپسی نہیں ہوتی

جومر دعورت کے پستان د با تا ومردعورت دبا ہے وہ مرد ہمشہ ساتھ دیتا ہے

اور پتہ ہے میں نے تجھے کیوں چھوڑا ۔۔۔۔۔ wy کیونکہ تم میری محبت کی سفید چادر پر گندے پاؤں چلنے لگے تھے اور محبت تو پاک ہی اچھی لگتی ہے نا

اپنا تبصرہ بھیجیں